48

عمران خان کو ٹھنڈا کر کے کھانے کا مشورہ دوں گا، چوہدری نثار نے 3 سال بعد چپ توڑ دی

آج حلف اٹھانے کا دن تھا، کہا گیا کہ سپیکر اور ڈپٹی سپیکر کے بغیر حلف نہیں لیا جاسکتا،آئندہ کے لائحہ عمل کا جائزہ لیں گے اور عین ممکن ہے ہائیکورٹ جائیں، سیاسی معاملات پر تبصرہ نہیں کروں گا۔سابق وزیر داخلہ کی گفتگو

لاہور(تازہ ترین 23 مئی2021ء) سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان آج حلف اٹھانے کے لئے پنجاب اسمبلی پہنچے۔چودھری نثار حلف اٹھائے بغیر اسمبلی سے باہر آگئے اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ لاہور ہمیشہ سے میرا گھر رہا ہے۔3 سال تک ذاتی طور پر سیاست سے کنارہ کشی کی،سیاست سے تین سال دور رہنے کے بعد ذاتی طور پر فیصلہ کیا کیونکہ سیاسی طور پر ایک پیش رفت ہوئی۔حکومت نے خود ساختہ آرڈیننس لانے کا فیصلہ کیا۔رات کے اندھیرے میں آرڈیننس سعیدہ تو اس پر تحفظات ہوں گے،انہوں نے مزید کہا کہ میرا موقف تھا اور آج بھی اس پر قائم ہوں قومی اسمبلی کی نشست پر ناکام ہوا یا کیا گیا اس پر ایک موقف تھا۔آج حلف اٹھانےکا دن تھا۔آج کہا گیا کہ سپیکر اور ڈپٹی سپیکر کے بغیر حلف نہیں لیا جاسکتا ،یہ بالکل غلط ہے۔

آئین کے تحت چیئرمین پینل کے ذریعے اسمبلی کا حلف اٹھایا جا سکتا ہے۔آئندہ کے لائحہ عمل کا جائزہ لیں گے اور عین ممکن ہے ہائیکورٹ جائیں۔چودھری نثار علی خان نے مزید کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کو مشورہ دیتا ہوں کہ ٹھنڈا کرکے کھائیں۔بد قسمتی سے جو حکمران بن جاتا ہے اس کو مشورے دینے والے بہت آ جاتے ہیں۔عمران خان کے اس وقت بہت دوست ہیں انہیں مشورہ دینے کی ضرورت نہیں چوہدری نثار نے سیاسی معاملات پر تبصرہ کرنے سے گریز کیا۔اضح رہے کہ چوہدری نثار 2018 کے انتخابات میں پی پی 10 راولپنڈی سے آزاد حیثیت سے منتخب ہوئے تھے مگر انہوں نے ایم پی اے کے طور پر حلف نہیں اٹھایا تھا گزشتہ روز انہوں نےحلقہ کے ووٹرز ،سپورٹرز اور عمائدین کی مشاورت کے بعد حلف اٹھانے کا فیصلہ کیاتھا اور فیصلے سے باضابطہ طور پرپنجاب اسمبلی سیکرٹریٹ کو آگاہ کر دیا تھا.ا چوہدری نثار علی خان نے اتوار کو ایک بیان جاری کیا جس میں اپنے حوالے سے پھیلانے والی افواہوں کو مسترد کرتے ہوئے کہاتھاکہ موقف نہیں بدلا، حلقے کے عوام کیلئے آج حلف اٹھا رہا ہوں پچھلے چند دنوں سے میرےپنجاب اسمبلی کے حلف اٹھانے کے حوالے سے مختلف خبریں اور کہانیاں گردش کرتی رہیں.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں