34

یکم مئی سے پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے کا امکان

پیٹرول کی قیمت میں پونے 6 روپے فی لیٹر تک اضافے کی تجوزی دی گئی ہے جب کہ ڈیزل کی قیمت میں بھی 6 روپے فی لیٹر تک اضافے کا کہا گیا ہے ، اوگرا نے پیٹرولیم ڈویژن کو سمری ارسال کردی

اسلام آباد ( تازہ ترین ۔ 30 اپریل2021ء ) پاکستان میں یکم مئی سےپٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافے کا امکان ہے ۔ میڈیا ذرائع کے مطابق آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری پیٹرولیم ڈویژن کو بھیجی گئی ہے ، جس کے مطابق پٹرول کی قیمت میں پونے 6 روپے فی لیٹر تک اضافے کی تجوزی دی گئی ہے جب کہ ڈہزل کی قیمت میں بھی 6 روپے فی لیٹر تک اضافے کا کہا گیا ہےتاہم قیمتوں کا حتمی فیصلہ وزارت خزانہ وزیر اعظم عمران خان کی مشاورت سے کرے گی۔بتایا گیا ہے کہ پٹرول اور ڈیزل کی مجوزہ قیمتوں کا تعین موجودہ پیٹرولیم لیوی کی شرح پر کیا گیا ہے ،پٹرول پر موجودہ لیوی 11 روپے 23 پیسے فی لیٹر ہے جب کہ ڈیزل پر پٹرولیم لیوی 15 روہے 29 پیسے فی لیٹر ہے۔

خیال رہے کہ اس سے قبل رمضان المبارک میں عوام کیلئے ریلیف فراہم کرتے ہوئے حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی تھی ، وفاقی حکومت کی جانب سےپٹرول 1 روپے 79 پیسے، ہائی اسپیڈڈیزل 2روپے 32 پیسے، لائٹ اسپیڈڈیزل 2 روپے 21 پیسے جبکہ مٹی کا تیل 2روپے 6 پیسے سستا کیا گیا تھا ، کمی کے بعدپٹرول کی نئی قیمت 108.56 روپے اورڈیزل کی نئی قیمت 110.76 روپے فی لیٹر ہو گئی جب کہ لائٹ اسپیڈڈیزل کی فی لیٹر قیمت 77 روپے 65 پیسے اور مٹی کےتیل کی فی لیٹر قیمت 80 روپے مقرر کی گئی ۔دوسری جانب ملک بھر میںکے ذخائر میں اضافے کے لیے وزارت پٹرولیم نےتیل اور گیس کی تلاش کے لیے مزید 6 بلاکس کے لائسنس جاری کر دیے ، میڈیا رپورٹ کے مطابق حکومت پاکستان نے شاران بلاک کے 60% حقوق عارضی بنیادوں پر ماڑی پٹرولیم اور 40% حقوقOGDCL کو مشترکہ منصوبے کے طورپر جنوری 2021ء میں دیئے تھے جب کہ قلعہ سیف اللہ کے %60 حقوقOGDCL اور%40 حقوق MPCL کے پاس ہیں ، شاران اور قلعہ سیف اللہ بلاکس بلوچستان کے ضلع زوب اور قلعہ سیف اللہ میں واقع ہیں۔وفاقی وزیر برائے توانائی حماد اظہر نے کہا کہ ایکسپلوریشن سرگرمیوں سے ملکی آئل وگیس کی پیداوار میں اضافہ ہو گا ، ایکسپلوریشن سے ای اینڈ پی کارروائیوں سے روزگار کے مواقع بھی پیدا ہوں گے ، تین سالانہ ایکسپلوریشن سرگرمی کے دوران کمپنیاں 24.68 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کریں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں